حکمرانوں نے عالمی اسٹیبلشمنٹ کے کہنے پر کشمیرسے متعلق پسپائی اختیار کی، سراج الحق – ایکسپریس اردو

0
84

اس جرم میں سابقہ حکمران بھی برابر کے شریک ہیں، حکمرانوں نے بھارت کے ساتھ سودا کرلیا کہ سری نگر تمھارا، مظفرآباد ہمارا (فوٹو: فائل)

 لاہور: امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ پاکستانی حکمرانوں نے بھارت کے ساتھ سودا کرلیا کہ سری نگر تمھارا، مظفرآباد ہمارا، عالمی اسٹیبلشمنٹ کے کہنے پر کشمیر پر پسپائی اختیار کی گئی، سابقہ حکمران بھی اس جرم میں برابر کے شریک ہیں۔

یہ بات انہوں نے لاہور مال روڑ پر یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر نکالی گئی ریلی کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ ریلی میں خواتین، بچوں سمیت بڑی تعداد میں لوگ شریک تھے۔ سراج الحق نے کہا کہ  گلگت بلتستان کو الگ صوبہ بنا کر سازش کی گئی، مقبوضہ وادی میں مظلوم اور  بے کس کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ گرائے جارہے ہیں مگر پاکستان کے حکمرانوں اور عالمی برادری کا ضمیر سویا ہوا ہے، دہلی کے فاشسٹ حکمران سن لیں کشمیر آزاد ہوکر رہے گا، مقبوضہ کشمیر کا ایک ایک چپہ ہمارا، ایک انچ زمین سے دست بردار نہیں ہوں گے۔

سراج الحق نے کہا کہ کا کہنا تھا کہ کشمیر ایٹمی طاقتوں روس، بھارت، چین اور پاکستان کے درمیان گھرا ہوا علاقہ ہے اور اس کے دوسری طرف افغانستان ہے جس نے دو ایٹمی طاقتوں کو شکست دی، عالمی برادری کا فرض ہے کہ وہ اس مسئلہ کو سنجیدگی سے لے اور بھارت کی مقبوضہ وادی میں خون کی ہولی بند کرائے، اقوام متحدہ، او آئی سی اور عالمی حقوق کی تنظیمیں بھارت پر زور دیں کہ وہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کے قانون کو ختم کرے اور وہاں استصواب رائے کرائے۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ حکمران مودی حکومت کے 5 اگست کے ظالمانہ اقدام کو ڈیڑھ سال کا عرصہ گزر جانے کے بعد بھی جرأت مندانہ موقف اختیار نہیں کرسکے، نام نہاد بڑی سیاسی جماعتوں نے بھی چپ سادھ رکھی ہے اور حقیقت میں وہ اس جرم میں برابر کی شریک ہیں کیونکہ اپنے دور حکومت میں بھی انھوں نے کشمیر کی آزادی کے لیے کچھ نہیں کیا۔



Source   by   Express News

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں